ایک مختصر قصہ: میں نے کیوں ایک لادین کو اسلام پر لانے کی کوشش ترک کر دی

Posted by

یہ دو سال پہلے کی بات ہے۔ میرا سب سے اچھا دوست عاطف کافی بدل گیا تھا۔ اس نے یہ بات میرے سوا کسی کو نہیں بتائی تھی کہ وه ایتھیئسٹ ہو چکا ہے۔ میں نے فیصلہ کیا کہ اس کو راهِ راست پہ لے کے آؤں گا۔ لہٰذا اس کا یہ راز صرف اپنے تک محدود رکھ کر میں اس سے ہر دوسرے تیسرے دن ملنے لگا۔ میں اپنی تیاری کر کے آتا تھا اور مختلف دلائل سے اس کو ایتھیزم سے ہٹانے کی کوشش کرتا رہا۔ وہ بھی سکون سے اپنے دلائل پیش کرتا اور یوں ہماری ملاقات بغیر کسی نتیجہ کے اختتام پزیر ہو جاتی۔ ہم راولپنڈی کے جس پارک میں ملتے تھے وه شام کے بعد زیاده تر سنسان ہی رہتا تھا۔ سوائے گیٹ پہ بیٹھے ایک بدوبودار بوڑھے فقیر اور اکثر کوڑا چنتی ایک بوڑھی عورت کے شاذ ہی کوئی اور وہاں نظر آتا تھا۔ اسلئے ہماری بے حد ٹچی بحث کے لیے یہ جگہ معقول تھی۔ مجھے ایک بار کچھ دن کے لئے کراچی جانا پڑا۔ وہاں بھی وقت نکال کر میں نے چند علما سے ملاقات کی اور دلائل جمع کیے، یہ کہہ کر کہ انٹرنیٹ پر بحث کے لیے ایتھیزم کے خلاف مواد چاہیے۔

جس دن میری واپسی تھی، اسی دن عاطف کا فون آیا کہ کل ہمارے محلے میں ایک جنازه ہے، ہو سکے تو میں اپنے جاننے والوں کو آگاہ کردوں کیونکہ مرنے والا ایک اجنبی ہے۔ میں عاطف کی اس ڈیمانڈ پرکافی حیران ہوا کہ اس کو کیا لگے جنازے اور نماز سے۔ خیر میں نے اپنے دوستوں، رشتہ داروں اور محلے داروں کو آگاہ کیا اور خود بھی اگلے دن جنازے پہ پہنچ گیا۔ عاطف وہاں موجود نہیں تھا۔ سب لوگ تدفین کر کے چلے گئے۔ پھر کوڑا چننے والی بوڑھی عورت روتی ہوئی میرے پاس آئی اور شکریہ ادا کیا۔ میرے تجسس پر اس نے مجھے بتایا کہ یہ مردہ اس کا شوہر اور وہی بوڑھا فقیر تھا جو پارک کے باہر بیٹھا رہتا تھا۔ اس کی موت کے بعد کسی نے اس کو ہاتھ تک لگانا گوارہ نہ کیا۔ تب وہ لڑکا جو تمہارے ساتھ پارک میں آتا تھا، اس نے مدد کی اور کفن دفن کا انتظام کر کے دیا۔

میں نے اس عورت کو حوصلہ دیا، مزید امداد کی یقین دہانی کرائی اور گھر واپس آگیا۔ کافی دیر گہری سوچ نے مجھے گھیرے رکھا۔ بالآخر میں نے وہ سارے کاغذ نکالے جو میں نے ایتھیزم کے خلاف جمع کیے تھے اور اسی پارک میں جا کر ان کو آگ لگادی۔

شدت سے احساس ہوا کہ ایک اچھا انسان ہونا ایک اچھے مسلمان ہونے سے کس قدر زیادہ اہم ہے۔ اب عاطف اور میں کبھی مذہب کی بات نہیں کرتے۔ میں نے اپنا ترازو تبدیل کر لیا ہے۔ عاطف کا عقیدہ کیا ہے کیا نہیں مجھے کوئی فرق نہیں پڑتا جب تک وہ ایک اچھا انسان ہے، میرا دوست ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *